Follow Us

آج کا دن کیسا رہے گا

تازہ ترین خبریں

روپیہ مستحکم، ڈالر کی تنزلی کا سفر تیزی سے جاری

 کراچی: آئی ایم ایف کی جانب سے رواں ماہ کے اختتام تک قرض پروگرام کی بحالی سے میکرو اکنامک استحکام اور ادائیگیوں کا توازن قابو میں آنے کی توقعات پر چار روزہ تعطیلات کے بعد بدھ کو بھی ڈالر کی قدر میں تنزلی برقرار رہنے سے ڈالر کے انٹر بینک ریٹ 224، 223 اور 222 روپے سے بھی نیچے آگئے۔

کاروباری دورانیے میں اتار چڑھاو کے بعد انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر کی قدر مزید 2روپے 12پیسے کی کمی سے 221روپے 91پیسے کی سطح پر بند ہوئی۔ اس طرح سے 28 جولائی کے 239روپے 94 پیسے کے مقابلے میں اب تک انٹر بینک مارکیٹ میں مجموعی طور پر 18روپے 3پیسے کی کمی واقع ہوئی ہے۔

اسی طرح اوپن کرنسی مارکیٹ میں بھی طلب نہ ہونے کے سبب ڈالر کی قدر 4 روپے کی کمی سے 218روپے کی سطح پر بند ہوئی، اس طرح سے اوپن مارکیٹ میں 28جولائی کے 244روپے کے مقابلے میں اب تک مجموعی طور پر 26روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ رواں سال میں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ابتدائی تخمینے سے کم ہونے اور سمندر پار مقیم پاکستانیوں کی جانب سے بھیجی جانے والی ترسیلات زر 32ارب ڈالر کی سطح پر برقرار رہنے کی پیشگوئیوں اور معاشی استحکام کے ساتھ ذرمبادلہ پر دباؤ دو ماہ میں ختم ہونے کی توقعات پر ڈالر کمزور اور روپیہ تگڑا ہوتا جا رہا ہے۔

عالمی مارکیٹ میں خام تیل اور دیگر کموڈٹیز کی گھٹتی ہوئی قیمتوں سے درآمدی بل مزید کم ہونے کی توقعات سے بھی مارکیٹ میں ڈالر کے طلبگار کم ہوگئے ہیں اور ڈالر کی خریداری کرنے والے محدود ہوگئے ہیں جبکہ فروخت کنندگان سامنے آگئے ہیں۔